طبقات ابن سعد : ابو بکر صدیق کا حضور پاک کے وصال پر مرثیہ

یا عین فا بکی ولا تسالی و حق البکاء علی السید
اے آنکھ گریہ کر اور اس سے ملول نہ ہو ایسے سردار کے شایان شان ہے کہ اس پر روئیں
علی خیر خندف عند البلا امسی لغیب فی اللحد
ایسے سردار جو آزمائش کے وقت بہترین ثابت هوے ،آج انکی شام اس طرح ہوئی کہ قبر میں دفن ہو گئے
فصلی الّمائیک ولی العباد و رب البلاد علی احمد
وہ مالک جو بندوں کا والی اور شہروں کا پروردگار ہے رسول الله صلی الله علیہ وسلم پر درود بھیجے
فکیف الحیاتا لفقد الحبیب و ذین المعاشر فی المشہد
اب زندگی کی کیا صورت ہے وہ محبوب تو کھو گیا ،جو تمام حاضرین صحبت کے لئے وجہ زینت تھا وہ تو جاتا رہا
فلیت المماق لنا کلنا و کتا جمیعا مع المہتدی
اے کاش ہم سب کو موت آ جاتی اور سب کے سب اسی ہدایت یافتہ کے ساتھ ہوتے .

(عربی کی ممکنہ غلطیوں پر پیشگی معذرت )

Advertisements

2 thoughts on “طبقات ابن سعد : ابو بکر صدیق کا حضور پاک کے وصال پر مرثیہ

Leave a Reply

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

You are commenting using your WordPress.com account. Log Out / Change )

Twitter picture

You are commenting using your Twitter account. Log Out / Change )

Facebook photo

You are commenting using your Facebook account. Log Out / Change )

Google+ photo

You are commenting using your Google+ account. Log Out / Change )

Connecting to %s