عرش عظیم سے خاموشی کا تحفہ کیسے ملتا ہے ؟ اشفاق احمد کی کتاب”بابا صا حبا ” سے عماد بزدار کا انتخاب

جب بھی تم پر کوئی موڈ طاری ہو ، غم کا موڈ ، غصے کا موڈ ، نفرت کا ، شہوت کا ، خوشی کا جولانی کا حتیٰ کہ نماز میں بھی کوئی موڈ طاری163879_10150122892275159_122306110158_7691229_4729643_n ہو تو ہمیشہ یاد رکھیے کہ یہ بھی گزر جائیگا –
بس اس کو ایک عادت بنا لو کہ یہ بھی گزر جائیگا – اور یہ بھی گزر جائیگا –
حقیقت یہ ہے کہ موڈ گزر جاتا ہے ، چلا جاتا ہے – اور تم صاف ستھرے رہ جاتے ہو دھوئے دھلائے –
آہستہ آہستہ تم میں یہ صلاحیت پیدا ہو جاتی ہے کہ اپنے آپ کو موڈ سے دور کر لو – پھر تم میں اور موڈ میں فاصلہ پیدا ہوجاتا ہے دوئی پیدا ہو جاتی ہے –
پھر تم ایک تماشا بن جاتے ہو اور موڈ کو ایک شاہد کے طور پر ایک گواہ عینی گواہ کے طور پر دیکھنے لگ جاتے ہو –
پھر تم پر خاموشی اترتی ہے – وہ خاموشی نہیں جو تم زبردستی اپنے آپ پر طاری کرتے ہو یا زور لگا کر چپ اختیار کرتے ہو –
یہ خاموشی اور طرح کی ہوتی ہے ، جو غیر معلوم سے آتی ہے – کسی نا معلوم مقام سے – عرش سے ، عرش عظیم سے ، تحفہ بن کر

Advertisements

Leave a Reply

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

You are commenting using your WordPress.com account. Log Out / Change )

Twitter picture

You are commenting using your Twitter account. Log Out / Change )

Facebook photo

You are commenting using your Facebook account. Log Out / Change )

Google+ photo

You are commenting using your Google+ account. Log Out / Change )

Connecting to %s