میں ایک اعلی تعلیم یافتہ ،توہم پرست آدمی ہوں .ممتاز مفتی کا اشفاق احمد اور دیگر دوستوں سے دلچسپ مکالمہ پڑھیں .

عماد کی بات سن کر تھوڑی دیر جیپ میں خاموشی رہی .
پھر عمر کہنے لگا ،یہ سب داستانیں ہیں۔میں خواجہ خضر کو نہیں مانتا۔
مفتی نے کہا نہ مانو چن جی ۔ بات پر غور کرو ۔بات ماننے والی ہے۔
اعظمی نے کہا : یار مفتی ! اب تو پنڈی سے باہر کے لوگوں کو بھی علم ہو گیا ہے کہ تو نہایت ضعیف الاعتقاد ادیب ہے۔
مفتی نے ہنس کر کہا میں ادیب با الکل نہیں صرف ضعیف الاعتقاد شخص ہوں۔
اور وہ جو تیرا والد فرایئڈ تھا جس کی تو حرامی اولاد ہے وہ؟؟ عمر نے پوچھا؟
“وہ”—– مفتی نے سر کھجا کر کہا اس سے تو میں نے علم حاصل کیا ہے ۔ در اصل میں ایک highly educated superstitious man ہوں۔
مسعود نے قہقہہ مار کر کہا : لو پُٹ لو کیا پُٹتے ہو۔


یہ اقتباس عماد بزدار نے اشفاق احمد کی کتاب “سفر در سفر ” سے لیا ہے.

.

Advertisements

Leave a Reply

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

You are commenting using your WordPress.com account. Log Out / Change )

Twitter picture

You are commenting using your Twitter account. Log Out / Change )

Facebook photo

You are commenting using your Facebook account. Log Out / Change )

Google+ photo

You are commenting using your Google+ account. Log Out / Change )

Connecting to %s