پی ایس ایل ڈرافٹ کے بعد تمام پانچ ٹیموں کا تجزیہ .چیمپئن کون بنے گا ؟ ثاقب ملک

پی ایس ایل ڈرافٹ مکمل ہو چکا ہے .تمام ٹیموں کی تشکیل ہو چکی ہے .ٹیموں کی خوبیوں خامیوں ،کمزوریوں اور طاقت کا جائزہ لیتے ہوئے ،ممکنہ فاتح ٹیم اور فائنلسٹ ٹیموں کی پیشن گوئی کریں گے جو کہ ایک ٹھوس اندازہ ہی ہو گا .
کراچی کنگزkings
کپتان شعیب ملک نے کراچی کنگز میں سیالکوٹ کے کھلاڑیوں کو خوب بھرتی کیا ہے .جو کسر رہ گئی تھی وہ پنڈی کے کھلاڑیوں کو بھر کر پوری کر دی گئی ہے .باقی آنچ بنگالی کھلاڑیوں سے پوری کی گئی ہے .جو کہ کراچی کو ،شہر میں موجود بنگالی اور بنگلہ دیش سے سپورٹ مہیا کرنے کا سبب بنیں گے .کراچی نے جارح مزاج اور ٹی ٹوینٹی سپیشلسٹ کھلاڑیوں کو ترجیح دی ہے .مگر ٹیم میں بیلنس کی کمی ہے .بیٹنگ میں شعیب ملک،ثاقب الحسن، ،مشفق الرحیم ،بوپارا اور سمنز وغیرہ کارآمد کھلاڑی ہیں مگر کسی بڑے سپر سٹار اور میچ ونر کی کمی لگ رہی ہے .بیٹنگ میں زیادہ ذمہ داری شعیب ملک اور ثاقب الحسن کو نبھانا پڑے گی .باقی عمدہ مدد دے سکتے ہیں .نوجوان نعمان انور ،اپنے عمدہ کھیل سے ورلڈ ٹی ٹوینٹی میں جگہ بنا سکتے ہیں .بولنگ میں سپاٹ فکسنگ سے داغ دار محمد عامر ،اور ثاقب الحسن میچ ونرز ہیں .عماد وسیم بھی ایک انتہائی اہم بولر ہوں گے .لیکن بولنگ میں ایک مزید فاسٹ بولر کی کمی ہے .بلاول بھٹی ،سہیل تنویر ،میر حمزہ سے بہت زیادہ اچھی توقعات وابستہ نہیں کی جا سکتیں .ٹیم اچھی بن گئی ہے .مگر شعیب ملک کی کپتانی اور مکی آرتھر کی کوچنگ اس ٹیم کو ڈبو سکتی ہے .مکی آرتھر ایک ناکام کوچ ہیں .ویسے بھی جنوبی افریقہ کے کوچز دنیا بھر میں شائد ہی کسی ٹیم کو چیمپین بنا سکے ہوں ،آئی پی ایل،سی پی ایل،بگ بیش وغیرہ اس بات کا ثبوت ہیں .میری نظر میں کراچی نے شاہ زیب حسن کو اپنے سکواڈ میں نہ ڈال کر بہت بے وقوفی کی ہے . .انکا انتخاب صرف سپلیمنٹری پلیئرز میں ہوا ہے جو کسی انجری کی شکل میں ہی کھیل سکیں گے .لوکل سٹار سرفراز اور انور علی کا اور ٹیموں میں جانا کنگز کی ناکامی ہے کنگز کی ممکنہ پلیئنگ الیون یہ ہو سکتی ہے .سمنز،نعمان انور،وینس،مشفق،ملک،ثاقب،عماد ،تنویر،عامر ،اسامہ،سہیل.
کراچی کی ٹیم میں کراچی کے لوکل پلئیرز اور سٹارز کی بھی کمی ہے .میرا اندازہ ہے کہ کراچی فتح یاب نہیں ہو سکے گی .
لاہور قلندر زqalandarz
رمیز راجہ نے قلندرز کے ٹیم ڈائرکٹر کی حیثیت سے بہت مایوس کیا ہے .انکا پورا فوکس سپر سٹار کھلاڑیوں پر رہا اور بولنگ میں انکی نظر گئی ہی نہیں .ہیڈ کوچ بھی ایک غیر معروف نام ہے .پیڈی اپٹن راجستھان کے کوچ رہے ہیں .مگر وہاں انکے ساتھ ڈراوڈ اور واٹسن جیسے تجربہ کار کپتان تھے .لاہور کی ٹیم میں بیٹنگ میں کافی طاقت ہے .سپر بمپر سٹار کرس گیل،براوو، اور لوکل سٹارز عمر اکمل،صہیب مقصود،رضوان کی موجودگی میں ٹیم کی بیٹنگ مضبوط ہے .لیکن مستفیض الرحمان کے علاوہ کسی فاسٹ بولر میں میچ جتوانے کی صلاحیت نظر نہیں آتی .مستفیض الرحمان کا بھی یہ سخت ٹیسٹ ہو گا جنہوں نے اپنے میدانوں پر شاندار کارکردگی دکھائی ہے .ٹیم کا سپین ڈیپارٹمنٹ کافی بہتر ہے .یاسر شاہ کے علاوہ ظفر گوہر ،زوہیب اور عدنان رسول موجود ہیں .لیکن ٹیم کے پاس ایک دو میچ ونر فاسٹ بولرز کی کمی ہے .ویسے بھی جس ٹیم میں گیل ہوں اس ٹیم کے جیتنے کا چانس کم ہو جاتا ہے کہ سارا فوکس گیل پر چلا جاتا ہے لاہور کو اس وبا سے بچنا ہو گا .باقی ایک آدھ میچ تو گیل تن تنہا جتوائیں گے مگر تسلسل سے پرفارم کرنا انکا چلینج ہو گا .لاہور نے رزاق کو منتخب نہ کر کے بہت احمقانہ حرکت کی ہے .رزاق کو مین سکواڈ میں ہونا چاہے تھا .میرا ایک موہوم سا اندازہ ہے کہ اپنے پیسے بچانے کے لئے لاہور نے رزاق کو سپلیمنٹری رکھا ہے تاکہ تب رزاق ماسٹرز کرکٹ لیگ سے آئیں تب انھیں کسی اور کھلاڑی کی جگہ ڈال لیا جائے .اگر ایسا سوچ کر رزاق کو سپلیمنٹری میں ڈالا گیا ہے تو عمدہ پلاننگ کہی جا سکتی ہے .لاہور کا اپنے لوکل سٹارز وہاب اور احمد شہزاد کو نہ پک کرنا لاہوریوں کے لئے مایوس کن ہے .
لاہور کی ٹیم ٹھیک ہے مگر کپتان کون ہو گا ایک اہم سوال ہے .میرا اندازہ ہے کہ لاہور کے جیتنے کا چانس بھی بہت کم ہے .قلندرز کی آئیڈیل پلیئنگ الیون یہ ہو سکتی ہے .گیل ،اظہر ،اکمل،رضوان،مقصود،براوو،حماد ،گوہر،کوپر،شاہ،مستفیض.
کوئٹہ گلیڈی ایٹرزgladiators
پوری لیگ کی سب سے سستی ٹیم کوئٹہ کی ہے .لیکن کوئٹہ نے ایک مناسب ٹیم کھڑی کر دی ہے .بلکہ ساری دنیا سے باغی اور ناراض ،مشکل کھلاڑیوں کو اپنی ٹیم میں ڈال کر کوئٹہ کے ہیڈ کوچ معین خان نے کافی ہمت دکھائی ہے .پیٹرسن ایک مشکل کھلاڑی ہیں انکو منیج کرنا آسان نہیں ہے .احمد شہزاد اور سرفراز کے بارے میں بھی یہی خیال کیا جاتا ہے یا کم سے کم وقار یونس نے اپنی نا اہلیت کی وجہ سے ایسا تاثر بنا دیا ہے .کوئٹہ نے بھی سنگاکارا کو سپلیمنٹری میں رکھ کر انکو ماسٹرز لیگ کے بعد ڈالنے کا منصوبہ سوچا ہو گا .معین خان ویسے بھی میں کافی تیز اور زہین ہیں .گلیڈی ایٹرز نے اچھی ٹیم تو بنا دی ہے مگر اس ٹیم میں بھی فاسٹ بولرز اور میچ ونر فاسٹ بولرز کی کمی ہے .صرف عمر گل ہی کسی حد تک میچ ونر کہے جا سکتے ہیں لیکن کافی عرصے بعد انکی فارم اور فٹنس کا بھی امتحان ہو گا .ٹیم کے پاس عمدہ پاور ہیٹرز ہیں .پیٹرسن ،شہزاد،سرفراز،چگمبرا،لوک رائٹ ،انور علی ،بلال آصف سب دھواں دھار ہٹنگ کر سکتے ہیں.کوئٹہ کا سپین بولنگ ڈیپارٹمنٹ بھی سٹرانگ ہے .افغانستان کے محمد نبی،آف سپنر بلال آصف،ذولفقار بابر اور محمد نواز اچھا انتخاب ہیں .ٹیم کا کپتان کسی نسبتاً نئے کھلاڑی کو یعنی احمد شہزاد اور سرفراز کو بھی بنایا جا سکتا ہے اور پیٹرسن کو یہ ذمہ داری بھی سونپی جا سکتی ہے .کوئٹہ کے کھلاڑیوں کو پیٹرسن کا بہت فائدہ ہو گا .میرے خیال میں پیٹرسن کو کپتان بنانا چاہئے .
کوئٹہ کی ٹیم فائنل تک جا سکتی ہے .جیتنا مشکل ہو گا .
گلیڈی ایٹرز کی آئیڈیل الیون یہ ہو سکتی ہے .شہزاد،رائٹ ،سرفراز،پیٹرسن،،سعد،چگمبرا،بلال،انور،ہولڈر،.گل،بابر.
پشاور زلمیzalmi
پشاور نے ایک تگڑی ٹیم بنائی ہے .گو کہ زیادہ تر کھلاڑی لاہور سے لئے گئے ہیں لیکن پشاور کی ٹیم سے بھی کچھ کھلاڑی موجود ہیں .سب سے اہم بات پاکستان کے سب سے بڑے سپر سٹار شاہد آفریدی ٹیم کے کپتان اور سب سےبڑی اور مشہور ترین شخصیت عمران ٹیم کے منٹور ہوں گے .ٹیم بھی بھلا شک و شبہ لیگ کی سب سے مضبوط ٹیموں میں سے ہے .بیٹنگ میں حفیظ،کامران،ملن ، تمیم،اور ماسٹرز لیگ کے بعد ہوج ،خود آفریدی ،اور سیمی، جیسے پاور ہیٹر موجود ہیں .ساتھ ہی ساتھ بیک اپ میں عامر یامین بھی ہوں گے .سب سے تگڑی بولنگ بھی زلمی کی ہے .پاکستان کے سٹار وہاب،جنید،انگلینڈ کے جورڈن ،وغیرہ عمدہ پیس بیٹری ہے .عامر یامین،سیمی ، اور عمران خان جونیئر میڈم پیس کی شکل میں ہمراہ ہوں گے .سپین ڈیپارٹمنٹ میں آفریدی کے ساتھ رحمان کا ساتھ ہو گا .اگر حفیظ کو بھی بولنگ کرانے دی گئی تو یہ سپین اٹیک مہلک ہو جائے گا .پھر بھی زلمی کا سپین باقی ٹیموں سے کچھ ہلکا ہے مگر اکیلے آفریدی سب کی کسر نکال سکتے ہیں .لیکن ٹیم میں ایک میچ ونر سپر سٹار بلے باز کی کمی ہے .خاص کر کسی انٹرنیشنل سپر سٹار کی ضرورت لگ رہی ہے .ہوج بعد میں آئیں گے .پشاور کی اپنی ٹیم سے انکے سٹار رفعت الله مہمند،افتخار،اور کپتان زوہیب کو نہ لینا مایوس کن ہے .
میرا اندازہ ہے کہ سب کچھ ٹھیک رہا تو پشاور فائنل تک تو لازمی جائے گی .زلمی کی ٹیم کی جیت کا کافی چانس ہے .انکی آئیڈیل پلئنگ الیون یہ ہو سکتی ہے .کامران،تمیم،حفیظ،ملن ،یوسف،آفریدی،سیمی،جورڈن ،وہاب،رحمان،جنید.
اسلام آباد یونائیٹڈunited.jpg
وسیم اکرم نے بطور ٹیم ڈائرکٹر اور ڈین جونز نے بطور کوچ ایک اچھی ٹیم بنا دی ہے .سب سے اہم بات کے اسلام آباد نے اچھے سمجھ دار کھلاڑیوں اور خاص کر عمدہ ابھرتے ہوئے پاکستانی نوجوانوں کو موقع دیا ہے .لیکن سب سے بڑی مایوسی اجمل کا مین سکواڈ میں نہ ہونا ہے .یونائیٹڈ کی ٹیم میں واٹسن جیسا سپر سٹار موجود ہے .بریڈ ہیڈن ایک اور عمدہ ٹی ٹونٹی کھلاڑی ہے جو ٹیم کو چلانا بھی جانتا ہے .مصباح خود پاکستان کا کپتان اور لیڈر ہے .وسیم اکرم بھی منیجمنٹ میں ایک شاندار لیڈر کی شکل میں موجود ہیں .یہ فیکٹر اسلام آباد کی ٹیم کو باقی ٹیموں سے جدا کر رہا ہے .بیٹنگ میں واٹسن،مصباح،بابر،رسل،ہیڈن،شرجیل اور بیلنگز موجود ہیں جو بیٹنگ کو پاور ہیٹرز کے ساتھ عمدہ نپے تلے بلے باز بھی میسر کرتے ہیں .بولنگ میں عرفان فاسٹ بولرز کی سربراہی کریں گے .سمیع تجربہ کار فاسٹ بولر ہیں .عماد بٹ ایک ابھرتے ہوئے فاسٹ بولر ہیں .رسل کے پاس بھی عمدہ رفتار ہے،واٹسن خود موجود ہیں ..فاسٹ بولنگ پشاور کے بعد سب سے بیسٹ ہے .سپین میں بدری ہیں،عمران خالد بھی ڈومیسٹک کے عمدہ پرفارمر ہیں .کامران غلام اچھے پاور ہٹر اور سپین آپشن ہیں . یونائیٹڈ کی ٹیم ایک متوازن ٹیم ہے .اس ٹیم کو انجری ہی ہروا سکتی ہے .اگر یونائیٹڈ اپنے پوٹینشل پر کھیلے تو فائنل تک انکا جانا لازمی ہے اور جیتنے کا سب سے زیادہ چانس موجود ہے .
لوکل سٹار عماد وسیم کا اسلام آباد کی جانب سے نہ کھلانا کافی مایوس کن ہے .اسلام آباد کے فاسٹ بولر شہزاد اعظم کا سلیکٹ نہ ہونا بھی کافی حیران کن ہے .اسلام آباد کے کافی لوکل کھلاڑی ٹیم میں نہیں ہیں بلکہ اور کسی ٹیم میں بھی نہیں ہیں .یونائیٹڈ کی بہترین پلئینگ الیون یہ ہو سکتی ہے .ہیڈن،شرجیل،واٹسن،بابر،مصباح،بلنگز،رسل،غلام،سمیع،عرفان،عمران خالد .
جو رہ گئے
یونس نے کپتانی کی شرط رکھ کر اپنا کیس خود خراب کیا .اجمل اور رزاق کا مین سکواڈز میں نہ ہونا المیہ ہے .ناصر جمشید،اویس ضیاء،عمران فرحت،شاہ زیب،رفعت الله،آصف حسین،راحت علی وغیرہ کا نہ سلیکٹ ہونا بھی کافی حیران کن ہے .
نتیجہ جو بھی ہو جو بھی جیتے ،لیگ کامیاب ہونی چاہئے اور ٹیمیں سب برابر برابر ہیں زیادہ فرق نہیں ہے .
فرنچائز میں سب سے اچھی ٹیم منیجمنٹ اسلام آباد کی ہے .سب سے اچھا کوچ ،بھی اسلام آباد کا ہے .سب سے اچھا کپتان پشاور کا لگ رہا ہے .سب سے اچھا بولنگ اٹیک ،پشاور زلمی کا دکھائی دیتا ہے .سب سے اچھی بیٹنگ اسلام آباد کی ہے .یعنی ان دونوں ٹیموں کے فائنل کا زیادہ چانس ہے .مگر یہ بات یاد رہے کہ کرکٹ پیپر پر نہیں کھیلی جاتی جو ٹیم اچھا کھیلے گی وہ جیتے گی .سب ٹیموں میں پوٹینشل موجود ہے .میں نے صرف اپنی رائے اور اندازہ پیش کیا ہے .آپ بھی اپنا اندازہ لگائیں.

 

Advertisements

Leave a Reply

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

You are commenting using your WordPress.com account. Log Out / Change )

Twitter picture

You are commenting using your Twitter account. Log Out / Change )

Facebook photo

You are commenting using your Facebook account. Log Out / Change )

Google+ photo

You are commenting using your Google+ account. Log Out / Change )

Connecting to %s