الطاف حسین کا رابطہ کمیٹی سے فرضی خطاب .تحریر ثاقب ملک

سپیکر آن ہوتا ہے .پہلے پہل اس سے کچھ غیر انسانی آوازیں بر آمد ہوتی ہیں .غ غ غ غ غ غررڑغررڑ  .پھر الطاف بھائی کی حیرت زدہ آواز نکلتی ہے “ہیلو ،ہیلو کوئی ہے ؟” نائن زیرو پر متحدہ کے حمایتیوں اور رابطہ کمیٹی کے اراکین بیک وقت چیخ اٹھتے ہیں .مجمعے میں شور مچ جاتا ہے .جی الطاف بھائی ،ہم ہیں .الطاف بھائی ہم سن رہے ہیں .بھائی ہزاروں لوگ ہیں .اب الطاف بھائی کہتے ہیں “آھہ آھہ آھہ آھہ ،میرے بھائیو ،میرے ے ے ے بزرگو ،میری بہنو ،میرے مہاجرو و و و و و و و و تمہیں الطاف حسین کا سلام پہنچے .اب الطاف بھائی لہک لہک کر گانے لگتے ہیں .تمہیں الطاف حسین کا سلام پہنچے .سلام ،سلام ،سلام ،سلام،سلام،سلام،سلام، سلا ا ا ا ا ا ا ا ا ا ا ا م ،سالہ ا ا ا ا آ ا ا آ ا ا ا م ،سلام سلامممممم الطاف حسین کی طرف سے سلام .پورا مجمع اپنے پورے جوش و جذبے سے سلام کا جواب دیتا ہے مگر الطاف بھائی کے جوش و جذبے سے دیئے گئے سلام کا مقابلہ نہیں کر سکتا .اب الطاف بھائی کہتے ہیں ،میں ں ں ں ں غ غ غ غرڑ غرڑ تین تک گنوں گا تو مجمعے میں خاموشی چھا جانی چاہئے ے ے .الطاف بھائی ایک ہی کہتے ہیں کہ پورے مجمعے کو سانپ سونگھ جاتا ہے .الطاف بھائی تین تک گنتی پوری کر کے کہتے ہیں ،شاباش ش ش ش ش ش ش ش ش ش ش ش ش ش !!!
الطاف بھائی اپنا خطاب جاری رکھتے ہوئے کہتے ہیں ” فاروق ستار کہاں ہے ؟فاروق ستار جو حاضرین میں موجود ہوتے ہیں وہ ایسے اٹھ کر اچھلنا شروع ہو جاتے ہیں جیسے انھیں کرنٹ لگ گیا ہے اور اچھل اچھل کر الطاف بھائی کو جواب دیتے ہیں کہ میں یہاں ہوں .رابطہ کمیٹی کے دیگر ارکان بھی الطاف بھائی کو متوجہ کرتے ہیں کہ فاروق ستار یہیں پر ہیں مگر الطاف بھائی اس وقت خود بول رہے ہوتے ہیں اس لئے نہیں سن پاتے .وہ کہتے ہیں “فاروق ق ق ق قق ق ق ق ،تم کہاں ہوووووو ؟نظر نہیں آ رہے ؟الطاف بھائی اب چنگھاڑ کر کہتے ہیں فاروق ستار ر ر ر ر رر ر رر ر ر ر ر کہاں ہو ؟فاروق ستار کی مری مری آواز آتی ہے الطاف بھائی میں یہاں ہوں .الطاف بھائی یہ سن کر اچانک رونا شروع کر دیتے ہیں “ہا ہا ہاہا آھہ آھہ آھہ آھہ مجھے دھوکہ دے دیا میری قربانیوں کو بھلا دیا تم نے ے ے ے ،میری پتلون میری پتلون ،فاروق ستار گنگ یہ سب سن رہے ہوتے ہیں .میں نے تمہیں پتلون لانے کا کہا تھا ،تم نے آدھی پتلون بھیجی آدھی خود کھا گئے .میں نے اپنا خاندان مہاجروں کے لئے مروا دیا ا ا ا ا ا ا ا ،آہھہ آہھا ہائے ،ہائے ،تم نے دھوکہ دیا .میں ایم کیو و و و و و و ایم سے استعفا دیتا ہوں .اپنا لیڈر کوئی اور چن لو .

الطاف بھائی کے اس دھماکہ خیز اعلان پرحاضرین شور مچا دیتے ہیں کہ آپ استعفا واپس لیں آپ کو آپ کے ناپ کے مطابق مکمل پتلون بھجوا دی جائے گی .کچھ دیر بعد الطاف بھائی استعفا واپس لے کر دوبارہ خطاب کا آغاز کرتے ہیں .”میں ایک ٹی وی چینل پر انٹرویو دے رہا تھا ..آپ سن رہے ہیں نا؟ ہاں ،تو میں ایک چینل پر انٹرویو دے رہا تھا کہ میزبان ،ہوسٹ نے مجھ سے ے ے اے آھہ آھہ آھہ غ غ غ غ غ غ غ غ یہ سوال پوچھا کہ یہ پوچھا کہ اگر برطانیہ اور پاکستان ،انگلینڈ اور پاکستان ،یونائیٹڈ کنگڈم اور پاکستان کی حکومتیں ں ں ں ں عمران فاروق ق ق ق ق ق ق قتل ….ہائے میرا عمران فاروق ققق ق ق ق قق اسکو ظالمو نے کیسے مار دیا ا ا ا ا ا ا ا ا ا.میں کیسے زندہ رہوں گا ؟ الطاف بھائی زار و قطار رونے لگ پڑتے ہیں .میں کیسے زندہ رہوں گا .عمران مجھے چھوڑ کر کیوں چلے گئے ؟؟ابھی تو تم نے میں نے مل کر حلیم کھانی تھی .اس دوران مجمع بھی رونا شروع کر دیتا ہے .
اس رونے دھونے کے بعد الطاف بھائی وہ واقعہ دوبارہ بتانا شروع کرتے ہیں .” ہاں تو میں بتا رہا تھا کہ اس میزبان نے جس کا نام شاکر صابر یا صابر شاکر تھا ،اس نے کہا کہ دونوں حکومتیں اگر متفق ہو جائیں اور عمران فاروق کے دو ملزمان کو تفتیش کے لئے برطانیہ کے حوالے کر دیں تو ؟ میں نے جواب دیا کہ آپ کیا فرما رہے ہیں ؟ یہ آپ کیا کہ رہے ہیں ؟ اگر ایسا ہوتا ہے تو میں چوھدری نثار سے کہوں گا کہ کہ کہ وہ ،آ ا ا ا پ کو ان دو ملزمان کے ساتھ بطور جہیز بھیج دے .رپورٹر کی ضرورت تو ہو گی نا …ٹھیک ہے ؟ ہیں ؟ تو وہ میزبان کچھ بولا ہی نہیں پروگرام ہی ختم کر دیا .
بابر ،بابر ،بابر غوری کدھر ہے ؟؟ بابر غوری پر زور آواز میں کہتے ہیں میں یہاں ہوں مگر پہلے کی طرح الطاف بھائی اپنی بات کر رہے ہوتے ہیں انہیں اس بات کا لیٹ پتا چلتا ہے .”بابر غوری کہاں ہے نظر نہیں آ رہا ؟ کیا اس نے آج بھی منہ نہیں دھویا ا ا ا ا ا کیا اسی لئے نظرنہیں آ رہا ؟؟ دیکھو ،،دیکھو کہیں اپنے وطن ،اپنے ملک افریقہ تو نہیں چلا گیا ؟؟ اس دوران رابطہ کمیٹی کا کوئی رکن چیخ کر کہتا ہے کہ بابر غوری یہاں ہے .الطاف بھائی اسے کہتے ہیں ،می نے یہ تحریک تم لوگوں کے عیش کے لئے نہیں شروع کی تھی .غوری ی ی ی ی ی …اچانک ہی الطاف بھائی رونا شروع کر دیتے ہیں .اہ اہ اہ ہائے اہائے ہائی ہائے میری حلیم میں سمندر کے راستے سے کراچی کی مکھی لندن میں میری حلیم میں گر گئی اور بابر غوری تمہیں معلوم ہی نہیں ں ں ں ؟ بابر غوری کے اوسان خطا ہو جاتے ہیں وہ بوکھلا کر ادھر ادھر دیکھتے ہیں جیسے سوال کر رہے ہوں کہ مجھے کسی نے اس مکھی کا کیوں نہیں بتایا ؟.الطاف بھائی رو رہے ہیں روتے روتے کہتے ہیں وسیم اختر کے رونے کی آواز نہیں آ رہی ،وہ کیوں نہیں رو رہا ؟ اسے کوئی غم نہیں میرا ؟ میں نے اسے مئیر بنایا اسے میری کوئی پرواہ نہیں ..پھر زار و قطار رونا شروع کر دیتے ہیں .وسیم اختر جو پہلے خاموش کھڑے ہوتے ہیں یکایک دھاڑیں مار مار کر رونا شروع کر دیتے ہیں .الطاف بھائی کو بتا دیا جاتا ہے کہ وسیم اختر رو رہے ہیں .لیکن الطاف بھائی ایم کیو ایم سے استعفا کا اعلان کر دیتے ہیں .
سب حاضرین زور و شور سے استعفا کی واپسی کا مطالبہ کرتے ہیں .الطاف بھائی کچھ دیر بعد ،استعفا واپس لے لیتے ہیں اور دوبارہ سے خطاب کا آغاز کرتے ہیں .”میں جاگیرداروں کو کہتا ہوں کہ اب ایم کیو ایم پنجاب ب ب ب ب ب میں آ رہی ہے ،تو میں کہتا ہوں کہ ساڈے نال متھا نہ لانا ،ورنہ اسی تہاڈی بوری بنا دیاں ں ں ں گے .
اس تحریر کا مقصد طنز و مزاح ہے ،کسی بھی شخصیت یا قومیت کی توہین و تذلیل مقصود نہیں ہے.

 

Advertisements

3 thoughts on “الطاف حسین کا رابطہ کمیٹی سے فرضی خطاب .تحریر ثاقب ملک

  1. اس تحریر کا مقصد طنز و مزاح تھا یا نہیں تھا ،اور اس سے کسی بھی شخصیت یا قومیت کی توہین و تذلیل مقصود تھی یا نہیں تھی لیکن ایک بات طے ہے کہ لکھنے والے نے اپنی توھین بھی کرالی اور تذلیل بھی کرالی ہے

    Like

Leave a Reply

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

You are commenting using your WordPress.com account. Log Out / Change )

Twitter picture

You are commenting using your Twitter account. Log Out / Change )

Facebook photo

You are commenting using your Facebook account. Log Out / Change )

Google+ photo

You are commenting using your Google+ account. Log Out / Change )

Connecting to %s